About Asim Jaasir Poet

عاصم جاسؔر کے بارے میں

عاصم جاسؔر دور جدید کے معتبر شاعر ہیں۔ عام فہم اور سادہ شاعری کرنے کی وجہ سے ان کو سہلِ ممتنع کا شاعر سمجھا جائے گا۔ جاسؔر کی شاعری پر کچھ کہنے سے پہلے بہتر ہو گا کہ کچھ ان کے اپنے بارے میں بات کی جائے۔ عاصم جاسؔر کا تعلق پاکستان کے شہر کراچی سے ہے مگر اب وہ کینیڈا میں مقیم ہیں اور وہیں فارمیسی میں ایم فل کرنے کے بعد مصروف کار ہیں جب کہ ان کی خاندانی جڑیں شہنشاہ تغزل جگؔر صاحب کے شہر مرادآباد سے جڑی ہیں۔ عاصم جاسؔر دھیمے لہجے کے مالک ہیں۔ان کی شاعری میں بے خودی کی کیفیت واضح ہوتی ہے اور اس طرح انہیں غزل کا رومان پرور شاعر کہا جا سکتا ہے۔ زندگی کے ہمہ گیر موضوعات ان کی شاعری کا خاصہ ہیں جو انہوں نے کٹھن محنت کے بعد حاصل کیا ہے۔ عاصم جاسؔر معاشرے اور شاعری کے درمیان ایک مناسب مقام کے حامل ہیں اور ان کی چھوٹی بحروں کی غزلیں بہت جلد مقبولیت عام کے درجے پر فائز ہو سکتی ہیں۔


 


عاصم جاسؔر کا شمار نیرنگ کے اعزازی شریک بانیوں میں ہے


یہ اپنے آپ کی طرح سخن میں بھی کھلی بیاض کی مثل ہیں۔ میر تقی میؔر اور ناصؔر کاظمی کی طرح وہ اداس دلوں پر کبھی نہ مٹنے والے نقوش چھوڑ جاتے ہیں مگر ان کے ہاں اردو غزل کے تخیل کی وہی خوب صورتی ملتی ہے جو غزل کا وصف رہا ہے۔ عاصم جاسؔر کی شاعری میں ہمیں عہد جدید کے محبوب کی مکمل تصویر دکھتی جو خود بھی عاشق ہی کی طرح دکھ سہتا ہے۔ لگتا ہے وطن سے ہجرت نے عاصم جاسؔر کے حساس دل پر گہرا اثر ڈالا ہے اور اس دور کے سائے ان کے حروف میں دکھ اور اداسیوں کے استعاروں میں تمام تر گہرائی کے ساتھ محسوس کیے جا سکتے ہیں۔