Air Travel After Covid-19 | Urdu

کورونا کی وبا کے بعد ہوائی جہاز کا سفر اس طرح‌ ہو گا

مسافروں کے چہرے پر ماسک، ہاتھوں میں دستانے اور جہاز میں سیٹوں کے درمیان شیشے کے حفاظتی گلاس۔ کووڈ انیس کے وبائی مرض کے بعد مسافر بردار طیاروں میں سفر کرنے کا عمل بالکل مختلف ہونے جا رہا ہے۔

ماضی قریب تک دیو ہیکل نما ہوائی جہاز چوبیس گھنٹے دنیا کے ایک کونےسے دوسرے  تک سینکڑوں مسافروں کو بیک وقت اپنی منزل تک پہنچاتے تھے۔

دوسری جانب معیاری قیمت اور کم دورانیے کی پروازیں ہوائی اڈوں کے رن ويز پر کم سے کم اورفضا میں زیادہ سے زیادہ وقت محو پرواز رہتی تھیں تاکہ بلا تاخیر ایک دن میں زیادہ سے زیادہ پروازوں کو فعال بنایا جا سکے۔ لیکن اب کورونا وائرس کی عالمگیر وبا کے بعد ایک بات واضح طور پر نظر آ رہی ہے کہ دنیا بھر میں ہوائی جہاز کا سفر ماضی کی طرح شاید دوبارہ ممکن نہ ہو سکے کیونکہ وائرس کے پھیلاؤ کے خدشے کے سبب طیاروں کی مکمل صفائی کرنے، دوران پرواز طیارے میں مسافروں کے درمیان حفاظتی فاصلے کو برقرار رکھنے، چہرے پر لازمی ماسک پہننے، اور روانگی سے قبل ایئر پورٹ میں کورونا وائرس کی تشخیص کے سلسلے میں مسافروں کا فٹا فٹ ٹیسٹ کرنے کی تجویز پر غور کیا جا رہا ہے۔