پینٹاگون نے پُراسرار اڑن طشتری کی وڈیوز جاری کر دیں

امریکی دفاعی ادارے پینٹاگون نے پیر کے روز سرکاری طور پر یو ایف اوز کی جنہیں عام زبان میں خلائی مخلوق کی اڑن طشتریاں بھی کہا جاتا ہے تین وڈیوز جاری کی ہیں۔

ان ویڈیوز کو امریکی نیوی کے پائلٹوں نے فلم بند کیا تھا۔

مؤقر مغربی اخبارات و نشریاتی اداروں گارجین، ہف پوسٹ، سی این این، فوربز، لائیو سائنس وغیرہ نے پینٹاگون کے حوالے سے ان وڈیوز کو مصدقہ قرار دیا ہے جن میں امریکی پائلٹوں نے ایک ایسے تیزرفتاری سے اڑتے ہوئے کسی وجود کو فلمایا ہے جس کے بارے میں دنیا میں کوئی نہیں جانتا کہ وہ کیا ہے؟

پینٹاگون نے ان وڈیوز کو جاری کرنے کے بعد ان ’اڑن طشتریوں‘  کو ’ناقابل فہم خلائی مظہر‘ کا نام دیا ہے اور کھل کر اعتراف نہیں کیا کہ اڑنے والی پُراسرار شے غیر ارضی مخلوق کا اسپیس شپ بھی ہو سکتی ہے۔  

تاہم پینٹاگون کا کہنا ہے کہ ان وڈیو کو سرکاری طور پر عوام کے لیے جاری کرنے کا مقصد ان کے اصلی اور درست ہونے کی تصدیق کرنا تھا کیوں کہ عرصۂ دراز سے لوگوں کی اکثریت اس شبہے کا اظہار کر رہی تھی کہ غالباً یہ وڈیوز اصلی نہیں بلکہ جعلی ہیں۔

چوں کہ ادھورا سچ مکمل جھوٹ سے زیادہ خطرناک ہوتا ہے لہٰذا نیرنگ ٹیم بہت جلد اس موضوع پر ایک تفصیلی رپورٹ تیار کر رہی ہے جن میں ان وڈیوز اور غیر ارضی مخلوق کے ہونے یا نہ ہونے کے بارے میں مفصل بحث کی جائے گی۔

دیکھتے رہیے کہ نیرنگ زندگی ہے۔