At Least 15 Killed In Somalia Terror Attack

صوماليہ: دہشت گرد حملے میں کم ازکم پندرہ ہلاک

افریقی ملک صومالیہ کے دارالحکومت ماغادیشو کے ایک ہوٹل پر کیے گئے ایک بڑے دہشت گردانہ حملے میں کم از کم پندرہ افراد مارے گئے ہیں۔ مرنے والوں میں متعدد حملہ آور بھی شامل ہیں۔ پولیس کے مطابق اس واقعے میں ایک خود کش حملہ آور نے پہلے ایک کار بم کے ذریعے ہوٹل کے صدر دروازے کے سامنے دھماکا کیا، جس کے بعد اس کے کئی ساتھی ہوٹل میں داخل ہو گئے۔ ان عسکریت پسندوں کی تعداد کم از کم پانچ تھی، جن کے ساتھ سکیورٹی اہلکاروں کا فائرنگ کا تبادلہ کئی گھنٹے تک جاری رہا۔ اس حملے کی ذمے داری دہشت گرد تنظیم الشباب نے قبول کر لی ہے۔ اس دہشت گرد تنظیم کے القاعدہ کے ساتھ رابطے ہیں اور وہ ماغادیشو کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ حکومت کے خلاف ہے۔

وائس آف جرمنی کے مطابق افريقی رياست صوماليہ ميں الشباب کے شدت پسندوں نے ايک ہی ہفتے ميں دو بڑے حملے کيے ہيں۔ تازہ حملے ميں شدت پسندوں نے موغاديشو کے ايک پر تعيش ہوٹل پر دھاوا بول ديا۔

صوماليہ کے دارالحکومت موغاديشو ميں اتوار اور پير کی درميانی شب شدت پسندوں کے ايک بڑے حملے ميں کم از کم سات افراد ہلاک اور بيس سے زائد زخمی ہو گئے ہيں۔ ابتدائی تفتيش کے مطابق حملہ آوروں نے سمندر کنارے واقع ايک پرتعيش ہوٹل کے باہر پہلے ايک کار بم دھماکہ کيا اور پھر فائرنگ شروع کر دی۔ شدت پسند گروہ الشباب نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

افريقی ملک صوماليہ سن 1991 سے فسادات کی لپيٹ ميں ہے، جب جنگی سرداروں نے سياد بری کی حکومت کا تختہ الٹ ديا تھا۔ مقامی شدت پسند گروہ الشباب پچھلے بارہ برس سے سرگرم ہے۔ يہ گروہ بين الاقوامی حمايت يافتہ حکومت کی رٹ تسليم نہيں کرتا اور ملک ميں اسلامی شرعی نظام کا نفاذ چاہتا ہے۔

موغاديشو کے ليڈو بيچ پر واقع ايليٹ ہوٹل پر ہونے والا يہ حملہ رات کے وقت ہی ختم ہو گيا تھا۔ سکيورٹی حکام نے دو سو پانچ افراد کو ريسکيو کرنے کا بھی بتايا ہے۔ ريسکيو کيے جانے والوں ميں حکومتی وزراء، قانون ساز اور شہری شامل تھے۔ سکيورٹی آپريشن ميں ملوث ايک کمانڈر کے بقول حملے ميں الشباب کے چار جنگجو ملوث تھے، جن کو کارروائی ميں ہلاک کر ديا گيا۔ انہوں نے يہ بھی بتايا کہ حملے کی تمام تر تفصيلات کچھ دير بعد جاری کی جائيں گی۔

يہ امر اہم ہے کہ صوماليہ ميں پچھلے ہفتے پير کو ہی الشباب کے شدت پسندوں نے مرکزی جيل پر حملہ کيا تھا۔ اس حملے ميں کم از کم پندرہ قيدی اور چار محافظ ہلاک ہو گئے تھے۔