Egyptian Police Claims To Kill 21 Terrorists

مصر – پولیس کے ہاتھوں اکیس’دہشت گرد‘ ہلاک

مصر کی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران، پولیس نے شمالی جزیرہ نما سینا میں خفیہ پناہ گاہوں پر حملہ کیا جس میں21 مشتبہ دہشت گرد ہلاک ہوگئے ہیں۔


Egyptian Police Claims To Kill 21 Terrorists


پولیس کا کہنا ہے کہ دہشت گرد عیدالفطر کی چھٹی کے موقع پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔ عرب ذرائع ابلاغ نے ان مشتبہ دہشت گردوں کی لاشوں کی تصاویر دکھائی ہیں جنہیں مصری پولیس نے ان دو ٹھکانوں پر چھاپوں کے دوران ہلاک کیا جہاں وہ مبینہ طور پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔


CLICK HERE


پولیس نے ایک چھاپہ شمالی سینا کے قصبے بر العبد کے ایک متروک گھر پر مارا جہاں دہشت گردوں نے حالیہ مہینوں میں سیکیورٹی فورسز پر کئی بار حملے کئے۔ پولیس نے دوسرا چھاپہ شمالی سینا کے ساحلی قصبے العرش کے نزدیک ایک زرعی علاقے میں مارا۔ حملے میں کئی پولیس کمانڈر زخمی ہوئے ہیں۔ دہشت گردوں نے حالیہ برسوں میں پولیس اور فوج کے حوصلے پست کرنے کی کوشش میں بڑی تعطیلات کے دوران سرکاری سیکیورٹی فورسز پر حملے کئے ہیں۔ دہشت گردوں نے شمالی جزیرہ سینا کی ایک مسجد میں 2017 میں تین سو نمازیوں کو بھی ہلاک کر دیا تھا۔


CLICK HERE


ایک غیر پیشہ ورانہ ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ مصری فوجی حکام حال ہی میں شمالی سینا کے مکینوں سے بات کر رہے ہیں اور نوجوانوں کی دہشت گردی کی مخالفت اور ملک کا دفاع کرنے کے لئے حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔ مصری ذرائع ابلاغ مسلسل قطر اور ترکی پر شمالی سینا اور لبیا میں سرحد کے ساتھ دہشت گردوں کی حمایت کا الزام لگاتے ہیں۔ دونوں ممالک ان الزامات کی تردید کرتے ہیں۔ تاہم، وہ مصر کی کالعدم اخوان المسلمین کی حمایت کا اعتراف کرتے ہیں۔