Strange Death of 300 Birds Read in Urdu

پُراسرار موت کا شکار تین سو پرندے سڑک پر آن گرے

 برطانیہ میں نارتھ ویلیز کے نواحی علاقے میں ایک سڑک پر آسمان سے یکایک تین سو پرندے پُراسرار طور پر ہلاک ہو کر آن گرے جن کی موت کو پولیس ایک ’مسٹری‘ قرار دے رہی ہے۔ مؤقر مغربی ذرائع ابلاغ کے مطابق اگرچہ ایک طرف پولیس کو دعویٰ ہے کہ اس نے ان پرندوں کی موت کا ’سبب‘ جان لیا ہے مگر اس کے باوجود قانون نافذ کرنے والے ادارے نے میڈیا کو اس بارے میں کسی بھی قسم کی معلومات فراہم کرنے سے صاف انکار کر دیا ہے جس سے معاملے کی نوعیت پُراسرار سے پُراسرار تر ہو گئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق نارتھ ویلز میں پولیس کو اس وقت ماہرین کو طلب کرنا پڑا جب مینا یا تلیر کی شکل سے ملتے جلتے اسٹارلنگ نامی پرندے جن کی تعداد تین سو کے قریب تھی یکایک فضاء سے نواحی علاقے کی ایک سڑک پر آن گرے۔


حیرت انگیز طور پر اگرچہ کچھ مردہ پرندے سڑک کنارے لگی جھاڑیوں میں بھی اٹکے ہوئے ملے مگر ایک بھی پرندہ قریبی کھیتوں میں گرا ہوا نہیں پایا گیا۔

Credit – North Wales Police Rural Crime Team


 بی بی سی سے بات چیت کرتے ہوئے اس موقعے پر موجود ڈیفائیڈ ایڈوارڈ اور ہنا اسٹیونز نے کہا کہ ہم نے گزشتہ منگل کی شام ان پرندوں کو زندہ اڑتے ہوئے دیکھا مگر جب ہم ایک گھنٹے بعد دوبارہ اس جگہ سے واپس گزرے تو تمام پرندے سڑک اور جھاڑیوں پر مرے ہوئے پڑتے تھے تاہم اسٹیونز کے بقول اس نے ان پرندوں کو سڑک پر کچھ چگتے ہوئے بھی دیکھا تھا۔

دوسری طرف نارتھ ویلز کے نواحی علاقوں میں قانون نافذ کرنے کی ذمے دار ٹیم کے چیف ڈیوی ایوانز نے گارجین کو بتایا کہ ہم تاحال پرندوں کی موت کے اسباب سے بے خبر ہیں جب کہ اصل حیرت کی بات یہ ہے کہ یہ پرندے صرف سڑک اور ساتھ لگی جھاڑیوں پر ہی کیوں گرے؟ اگرچہ ایوانز کے مطابق ان کے ادارے نے تمام متعلقہ ماہرین سے رجوع کر لیا ہے مگر تاحال اس پُراسرار واقعے کی کوئی ٹھوس سائنسی وجہ سامنے نہیں آسکی ہے۔