Interdimensional Portal in Urdu

بین الجہاتی دریچہ   

میں سمجھتا ہوں اس کہانی کو شیئر کرنے کی سب سے بہترین جگہ نیرنگ ہے کیوں کہ کہیں نہ کہیں بڑی گڑ بڑ ضرور ہو چکی ہے۔ میرا تعلق اسکاٹ لینڈ سے ہے اور میں ابرڈین یونی ورسٹی میں پڑھ رہا ہوں۔ آج رات میں یونی ورسٹی کی لائبریری سے مطالعہ کر کے گھر واپس آ رہا تھا کہ یکایک تاریک آسمان روشنی سے چمک اٹھا۔ یہ ایک عجیب بات تھی کیوں کہ شہر کے اس حصے میں لائٹیں زیادہ نہیں ہیں اس لیے یہاں سے آسمان رات میں تاروں بھرا دکھائی دیتا ہے۔   میرے ذہن میں فوراً آنے والا خیال یہ تھا کہ کسی نے ایٹم بم داغ دیا ہے؍ مگر فوراً ہی یہ چمک معدوم ہو گئی۔ جیسے ہی میری نظر تیز چمک کے بعد درست ہوئی میں  نے خدا کا شکر ادا کیا کہ یہ ایٹمی دھماکہ نہیں تھا ورنہ میں ابھی تک خاکستر ہو چکا ہوتا۔ کوئی دھماکا بھی سنائی نہیں دیا تھا۔ مگر میڈیا کا کہنا ہے کہ اس دوران زمین ہلی تھی اور زور دار آواز بھی سنائی دی تھی مگر میں نے کوئی آواز نہیں سنی اور مجھے ابھی تک کوئی ایسا شخص نہیں ملا جس نے کوئی آواز سننے کا دعویٰ کیا ہو۔   مگر میں نے اس وقت جو کچھ سنا تھا وہ چیخیں تھیں ۔۔۔ زور دار چیخیں ۔ ۔ ۔   ایسا لگتا تھا جیسے ہر 5واں شخص دیوانگی کا شکار ہو گیا ہو اور یہ حالت دیکھ کر میرا خوف سے برا حال ہو گیا تھا۔ آئس کریم کی دکان کے باہر میں نے ایک شخص کو چیختے سنا۔  وہ چیخ ایک ماورائے ارض آواز تھی۔ ایک گہری اور آنتوں سے نکلنے والی آواز جیسے کسی نے اسے آگ لگا دی ہو۔ یہ ایک نہایت بھیانک آواز تھی جو 20 سیکنڈ تک جاری رہی۔ اس وقت ایسا لگتا ہے جیسے وہ آواز ہمیشہ جاری رہی ہو۔ لوگوں کا ایک چھوٹا سا ہجوم اس شخص کے گرد اکٹھا ہو گیا تھا۔ اس شخص کا چہرہ مسلسل چیخنے کی وجہ سے سرخ ہو رہا تھا کیوں کہ وہ سانس نہیں لے رہا تھا۔ مگر جب چیخنے کے لیے اس کے پھیپھڑوں میں ہوا ختم ہو گئی تو ہم نے دوسروں کو چیختے ہوئے سنا۔   آج بدھ کی رات ہے اور یہ چھوٹا سا قصبہ سنسان پڑا ہے اس لیے مجھے یقین ہے کہ میرے پڑوسیوں نے بھی اس آدمی کو چیختے سنا ہو گا – کیوں کہ چیخیں تمام قصبے سے ابھر رہی تھیں۔ بے شک آج شدید سردی کے باعث ہر طرف سناٹا پھیلا ہوا ہے مگر مجھے مکمل یقین ہے کہ چیخنے والا صرف ایک ہی آدمی نہیں تھا۔ پھر یک لخت چیخیں تھم گئیں اور ہم نے جس آدمی کے گرد ہجوم لگایا ہوا تھا اس نے ایک گہری سانس اپنے سینے میں بھری۔ اس کے پاس بیٹھی اس کی گرل فرینڈ بری طرح رو رہی تھی اور اس نے اس آدمی کا سر اپنی گود میں رکھا ہوا تھا۔ کسی نے 911 ملایا اور اس کے ساتھ ہی میں وہاں سے بھاگ نکلا۔   غالباً مجھے وہاں ٹہرنا چاہیے تھا مگر میں اتنا خوف زدہ تھا کہ مزید وہاں رکنا ممکن نہیں تھا۔ مجھے یقین ہے آپ میں سے کسی نے بھی کسی انسان کو غیر انسانی آواز میں چیختے نہیں سنا ہو گا اور میں نے بھی آج تک نہیں سنا تھا۔ ایک بار میری بہن پا کے بال تراش رہی تھی تو انہوں نے ایک طرف جھک کر ہول ناک انداز میں کراہنا شروع کر دیا۔ ہر کراہ دو سیکنڈ طویل تھی اور میں انہیں الفاظ میں بیان نہیں کر سکتا۔ اس وقت مجھے لگا جیسے میری زبان سوج کر موٹی ہو گئی ہو؍ ہوا کا ایک گرم جھونکا مجھ سے ٹکرایا ہو اور وقت کی رفتار بہت دھیمی ہو گئی ہو۔ میں نے بولنے کی کوشش کی تھی مگر میں بول نہیں سکا۔ تھوڑی دیر بعد پا کی کراہیں رک گئیں اور ان کے ہوش و حواس بحال ہو گئے؍ مگر ان کا رنگ دھلے ہوئے لٹھے کی طرح سفید ہو رہا تھا اور ہمیں کچھ اندازہ نہیں تھا کہ ان کے ساتھ ہوا کیا ہے؍ مگر ہم خوش تھے کہ وہ ٹھیک ہو گئے ہیں مگر پھر بھی پا کی ان کراہوں نے مجھے جس دہشت میں مبتلا کیا میں اسے کبھی فراموش نہیں کر سکوں گا۔ چناں آج رات جب میں نے پا کی آواز سے 10 گنا زیادہ ہول ناک آواز میں اس آدمی کو چیختے سنا تو میرا پتہ پانی ہو گیا۔   میں اتنا بھی نہیں لکھنا چاہ رہا تھا مگر میں بہت پریشان ہوں۔  میرے شہر اور حتیٰ کہ ملک کے بارے میں بھی کوئی نہیں جانتا اور نہ ہی کوئی آج رات پیش آئے اس بھیانک ماجرے سے آگاہ ہے مگر اس واقعے کا سبب کوئی شہاب ثاقب نہیں ہے۔ وہ ایک نہایت ہی چمک دار روشنی تھی جس کے ساتھ ہی اس قصبے میں موجود لوگوں کی 10 فی صد تعداد نے یک لخت غیر انسانی آوازوں میں چیخنا شروع کر دیا؍ مگر اب ہر طرف خلائے بسیط کی طرح پر اسرار خاموشی اور سکوت پھیلا ہوا ہے۔ میں گھر واپس آ گیا ہوں۔ میرا روم میٹ ٹھیک ہے مگر اس نے بھی چیخوں کی آواز سنی ہے۔ تاہم اس نے وہ نہیں دیکھا جو میری آنکھوں نے دیکھا تھا اور اسے میڈیا کی خبروں پر یقین ہے کہ یہ ایک شہاب ثاقب تھا جس سے خوف زدہ ہو کر لوگوں نے اچانک چیخنا شروع کر دیا۔ مگر میرا خیال ہے کہ وہ ایک مکمل احمق آدمی ہے اور مجھے پورا یقین ہے کہ اصل ماجرا کچھ اور ہے۔   اصل بات بہت زیادہ بھیانک ہے کیوں کہ مجھے فیس بک یا ٹوئٹر پر اس روشنی اور چیخوں کے بارے میں ایک بھی لفظ پڑھنے کو نہیں مل رہا اور مجھے یقین ہے کہ ’اصل بات‘ یہاں سے باہر نہیں جانے پائے گی۔   ابرڈین میں اس وقت قیامت کا منظر ہے۔

  ختم شد